Pakistan Red Crescent distributes relief items to Dadu fire-blazed victims

Home  /  Direct from the field  /  Current Page

The Sindh Branch of Pakistan Red Crescent (PRC) immediately deployed its disaster management team to distribute relief items to the families affected by the fire-blazed villages in Mehar taluka of Dadu district.

 

 

 

 

 

According to a press release, Pakistan Red Crescent Sindh Disaster Management Team, led by Senior Vice Chairman Raffique Ahmed Jafferi, visited the two fire-blazed villages 35 km away from Mehar City, met the affected families and offered prayers and condolences. Villagers told the Red Crescent team that a severe sandstorm caused the fire to burn everything to ashes in 10 minutes, which is common this season of the year.

 

 

 

 

 

Under the supervision of Senior Vice Chairman Jafferi, the team has distributed a package consisting of Hygiene kits, Carnosine Stoves, Hurricane Lamps, mosquito nets and mats amongst 185 affected families in both fire-blazed villages. Jafferi said that immediately after the incident, a team from PRC District Branch Dadu was deployed to assess the situation and apprise the provincial headquarters in Karachi about the need for assistance to the families affected by the fire. Jafferi said the PDMA Sindh had already distributed tents and rations to the affected families, so the Red Crescent tried to provide other relief items that could help them further. He further said that Pakistan Red Crescent Sindh is always ready to alleviate the suffering of the victims of any disaster or horrific incident. Jafferi also urged philanthropists and donors to make maximum donations to the Pakistan Red Crescent for the victims of the Dadu fire so that more help could be given to those in need in a timely manner.

//////////////////

 

پاکستان ریڈ کریسنٹ نے دادو کے  میں آتشزدگی کے متاثرین میں امدادی سامان تقسیم کیا

 

پاکستان ریڈ کریسنٹ کسی بھی ناگہانی آفت یا ہولناک واقعے کے متاثرین کے دکھوں کا مداوا کرنے کے لیے ہمہ وقت تیار ہے: سینئر وائس چیئرمین رفیق احمد جعفری

 پاکستان ریڈ کریسنٹ (پاکستان ہلال احمر) کی سندھ برانچ نے فوری طور پر اپنی ڈیزاسٹر مینجمنٹ ٹیم کو ضلع دادو کے میہڑ تعلقہ میں آتشزدگی سے متاثرہ دو دیہاتوں میں امدادی سامان تقسیم کرنے کے لیے تعینات کیا۔ ایک پریس ریلیز کے مطابق، پاکستان ریڈ کریسنٹ سندھ کی ڈیزاسٹر مینجمنٹ ٹیم نے سینئر وائس چیئرمین رفیق احمد جعفری کی قیادت میں مہر شہر سے 35 کلومیٹر دور آگ سے جھلسنے والے دو دیہاتوں کا دورہ کیا، متاثرہ خاندانوں سے ملاقات کی اور دعا اور تعزیت کی۔ گاؤں والوں نے ہلال احمر کی ٹیم کو بتایا کہ ریت کے شدید طوفان کی وجہ سے آگ لگنے سے دس منٹ میں ہر چیز جل کر راکھ ہو گئی، جو کہ سال کے اس موسم میں عام ہے۔ سینئر وائس چیئرمین جعفری کی نگرانی میں ٹیم نے آگ سے جھلسنے والے دونوں دیہاتوں میں 185 متاثرہ خاندانوں میں حفظان صحت کی کٹس، کارنوسین چولہے، ہریکین لیمپ، مچھر دانی اور چٹائیوں پر مشتمل ایک پیکج بھی تقسیم کیا ہے۔ جعفری نے کہا کہ واقعے کے فوراً بعد،پاکستان ریڈ کریسنٹ کی ڈسٹرکٹ برانچ دادو کی ایک ٹیم کو صورتحال کا جائزہ لینے اور کراچی میں صوبائی ہیڈ کوارٹر کو آگ سے متاثرہ خاندانوں کی امداد کی ضرورت سے آگاہ کرنے کے لیے تعینات کیا گیا تھا۔ جعفری نے کہا کہ پی ڈی ایم اے سندھ پہلے ہی متاثرہ خاندانوں میں خیمے اور راشن تقسیم کر چکا ہے، لہٰذا ہلال احمر نے دیگر امدادی اشیاء فراہم کرنے کی کوشش کی جو ان کی مزید مدد کر سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان ہلال احمر سندھ کسی بھی ناگہانی آفت یا ہولناک واقعے کے متاثرین کے دکھوں کے مداوا کے لیے ہمہ وقت تیار ہے۔ جعفری نے مخیر حضرات اور عطیہ دہندگان پر بھی زور دیا کہ وہ دادو آتشزدگی کے متاثرین کے لیے پاکستان ریڈ کریسنٹ کو زیادہ سے زیادہ عطیات دیں تاکہ ضرورت مندوں کی بروقت مزید مدد کی جا سکے۔


Seven Fundamental Principles