PRCS-Sindh decided to expand free training on lifesaving and first aid in Sindh with proceeds from commercial training

Home  /  Direct from the field  /  Current Page

A team of professional trainers has been appointed at the Training Institute of Pakistan Red Crescent (PRC)-Sindh aimed to enhance industrial workers’ capacity to respond effectively to industrial accidents. Management of PRC-Sindh also decided to expand free training on lifesaving and first aid in Sindh with proceeds from commercial training.

 

Chairman PRC-Sindh Mrs. Shahnaz S. Hamid said that PRC-Sindh Training Institute had trained more than half a million people over the past three decades in various disciplines such as first aid and disaster management. She further said that the training sessions were conducted for students, teachers, housewives, volunteers, paramedic staff, police, journalists, and all walks of life, showing the positive and beneficial effects on society. “It is now imperative to increase the emergency response by providing proper first aid training to industrial workers so that they can save their own and the others’ lives in any emergency,” said Chairman Shahnaz. She added that the PRC-Sindh training institute offers numerous training sessions to commercial clients at very nominal charges. The chairman also declared that proceeds from commercial training would be used to extend free training in lifesaving and first aid in the Sindh province.

 

According to a Press Release issued by PRC-Sindh Media Department, commercial clients such as national and multi-national companies can contact Mr. Khurrum Latif, Training Manager, on phone number 0321-2719309 and email id: [email protected] for further information. This cooperation and assistance from commercial clients will be greatly valued and lauded because their money will be used to raise public consciousness and will continue to save the general public’s lives.

####################

 

پاکستان ریڈ کریسنٹ (ہلال احمر) کا تجارتی بنیادوں پر ابتدائی طبی امداد کی تربیت کا انعقاد

حاصل شدہ آمدنی صوبہ سندھ کےعام لوگوں کی مفت تربیت پر خرچ کی جائے گی:  چیئرمین شہناز حامد

 

 

پاکستان ریڈ کریسنٹ  کی سندھ برانچ میں واقع ٹرینگ انسٹی ٹیوٹ کے دائرہ کار کو وسیع کرتے ہوئے ابتدائی طبی امداد کی تربیت فراہم کرنے والوں کی پیشہ ورانہ ٹیم کا تقرر کیا گیا ہے۔ جس کا مقصد صنعتی حادثات سے بچاؤ اور انکے نتیجے میں ہونے والے نقصانات کو کم کرنا اور انسانی زندگی کو ابتدائی طبی امداد دیکر بچانے میں موثر انداز میں نمتنے کےلیئے صنعتی عملے کی صلاحیت کو بڑھانا ہے۔  پاکستان ریڈ کریسنٹ سندھ کے انتظامیہ نے تجارتی بنیادوں پر تربیت سے حاصل ہونے والی آمدنی سے سندھ بھر میں زندگی بچانے اور ابتدائی طبی امداد کے بارے میں مفت تربیت فراہم کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

چیئرمین پاکستان ریڈ کریسنٹ سندھ مسز شہناز ایس حامد نے کہا کہ ہمارا ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ گذشتہ تین دہائیوں سے نصف ملین سے زائد افراد کو مختلف شعبوں جیسے فرسٹ ایڈ اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ میں تربیت فراہم کر چکا ہے۔ ان تربیتی سیشن میں تمام شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد بشمول طلباء ، اساتذہ ، گھریلو خواتین ، رضاکاروں ، پیرامیڈک عملہ ، پولیس ، صحافیوں ، اور دیگر نے شرکت کی جن کا ہمارے معاشرے پربہت مثبت اثرات سامنے آئے ہے۔ چیئرمین شہناز نے کہا اب لازمی ہے کہ صنعتی کارکنوں کو ابتدائی طبی امداد کی مناسب تربیت دے کر ان کے صلاحیتوں میں مزید اضافہ کیا جائے تاکہ وہ کسی بھی ہنگامی صورتحال میں اپنی اور دوسروں کی جانیں بچاسکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان ریڈ کریسنٹ کا ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ تجارتی کمپنیوں کو بہت ہی معمولی چارجز پر متعدد ٹریننگ سیشن پیش کرتا ہے۔ چیئرمین نے یہ بھی اعلان کیا کہ تجارتی تربیت سے حاصل ہونے والی رقم کو صوبہ سندھ کے عام لوگوں کو زندگی بچانے اور ابتدائی طبی امداد کی مفت تربیت فراہم کرنے کے لئے استعمال کیا جائے گا۔ پاکستان ریڈ کریسنٹ سندھ  کے میڈیا ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق قومی اور کثیرالاقومی کمپنیاں  ٹریننگ منیجر جناب خرم لطیف سے اس فون نمبر 0321-2719309 پراور ای میل: [email protected] پر رابطہ کرکے مزید  معلومات حاصل کر سکتی ہیں۔

 تجارتی اداروں کی جانب سے اس تعاون کی بہت قدر اور تعریف کی جائے گی کیونکہ ان کا پیسہ عوامی شعور اجاگر کرنے کے لئے استعمال ہوگا اورعام عوام کی زندگیاں بچاتا رہے گا۔


Seven Fundamental Principles